ڈیل کی افواہیں اور حقیقت!!!

تحریر: حسنات احمد کوٹ

ایک مرتبہ پھر یہ شوشہ چھوڑ دیاگیا ہے کہ میاں نوازشریف ڈیل کرنے جا رہے ہیں پہلے بھی یہ شوشہ کئیں بار چھوڑا جا چکا ہے پچھلے کچھ عرصے سے یہ شوشہ تب چھوڑا جاتا ہے جب میاں نوازشریف کی اپیل کی سماعت شروع ہو اور کوئی فیصلہ ہونے والا ہو تب یہ تاثر دینے کی کوشش کی جاتی ہے کہ میاں نوازشریف ڈیل کرنے کےلیے راضی ہوگئے یہ تاثر اس لیے دیا جاتا ہے اگر فیصلہ میاں نوازشریف کے حق میں ہو جاتا ہے تو پھر یہی تاثر دیا جائے کہ ڈیل کی وجہ سے فیصلہ حق میں آیا اور ریلیف ملا پر کئی بار اس شوشے نے دم توڑا البتہ نیب عدالت کے فیصلے جب ہائیکورٹ میں جاتے ہیں تو وہاں نیب عدالت کے مفروضوں پر سنائے گئی سزاؤں کے فیصلوں کی ہائیکورٹ دھجیاں اڑا کر رکھ دیتی ہے کیونکہ ہائیکورٹ نے ثبوتوں کو دیکھ کر فیصلہ کرنا ہوتا ہے۔

جیسے پہلے میاں نوازشریف اور مریم نوازشریف کی نیب کی سنائی جانے والی سزائیں معطل ہوئیں اب پھر نیب کی سزا کے خلاف میاں نوازشریف کی اپیل سماعت کےلیے مقرر ہے اب ستمبر میں اس کی سماعت ہوگی اور عدالت کے سامنے میاں نوازشریف کی بےگناہی کے اتنے ثبوت لائے جا چکے ہیں جو نیب عدالت کی سزا ختم کرنے کےلیے کافی ہیں اب اس کو اگر کوئی ڈیل کا رنگ دیا جائے تو یہ عدالت کے فیصلوں کی توہین ہے باقی میاں نوازشریف نے ڈیل ہی کرنی ہوتی تو وہ تب کرتے جب ان کے پاس کھونے کو بہت کچھ تھا وزارتِ عظمیٰ سے لے کر بیوی کی موت تک بہت کچھ کھویا پر میاں نواز شریف نے ڈیل نہیں کی سب کو معلوم ہے بیمار بیوی کو بسترِمرگ پر چھوڑ کر بیٹی کے ساتھ گرفتاری دینے پاکستان آئے پر تب بھی ڈیل نہ کی اتنا کچھ کھونے کے بعد قید کاٹنے کے بعد اب کیس عدالت میں ہیں تو اب وہ نوازشریف ڈیل کیسے کر سکتا ہے البتہ کوشش ڈیل کی کی جاتی رہی۔

اب نیب نے پھر مریم نواز شریف کو گرفتار کیا اب جس کیس میں مریم نوازشریف کو گرفتار کیا گیا سرے سے اس کا وجود ہی نہیں مریم نوازشریف کی گرفتاری سے پہلے ضرور میاں نوازشریف کو ڈیل کےلیے کہا گیا ہوگا پر میاں نوازشریف نے انکار کیا انکار کی وجہ سے ہی تو مریم نوازشریف کو اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ اپنے والد سے کوٹ لکھپت جیل میں ملاقات کےلیے موجود تھیں مریم نوازشریف کو والد کے سامنے گرفتار کرنے کی وجہ میاں نوازشریف کو اذیت پہنچانا تھی پر مریم نوازشریف نے خوشی سے گرفتاری دی اور انتقامی کاروائیوں کا سامنا کرنے کےلیے جرات اور بہادری کا مظاہرہ کیا اب اتنا کچھ ہونے کے باوجود میاں نوازشریف ڈیل کیوں کریں گے؟

کیونکہ میاں نوازشریف کا کیس اب ہائیکورٹ میں لگ چکا اور کافی مواد جمع ہو چکے جو سزا کو ختم کرنے کےلیے کافی ہیں دوسری طرف مریم نوازشریف نیب کی حراست میں ہیں جن کے خلاف ابھی تک نیب احتساب عدالت میں ثبوت پیش نہ کر سکا اور نیب ابھی تک مریم نوازشریف کا ریمانڈ مانگتی ہی نظر آئی کیونکہ نیب نے جس الزام میں مریم نوازشریف کو گرفتار کیا نیب کے پاس ابھی تک اس کا کوئی ثبوت نہیں اگر کوئی ثبوت ہوتا تو بار بار ریمانڈ نہ مانگنا پڑتا جن مشکلات کا سامنا میاں نوازشریف اور مریم نوازشریف نے کیا اب وہ مشکلات ان مشکلات سے بہت کم ہیں جو کھونا تھا کھو دیا اب اتنا کچھ کھونے کے بعد میاں نوازشریف ڈیل نہیں کریں گے باقی شوشے چھوڑنے والے چاہتے ہیں کہ ان کا میاں نوازشریف سے کوئی سمجھوتہ ہو جائے پر میاں نوازشریف اب کوئی بھی سمجھوتہ کرنے کو تیار نہیں۔

یہ ڈیل کی افواہیں پھیلا کر جو یہ لوگ نیا چورن بیچنا چاہتے ہیں وہ اب ان کا چورن بکنے والا نہیں کیونکہ میاں نواز شریف کو ان حالات میں ڈیل کی ضرورت ہی نہیں کیونکہ اب وہ جیت کے قریب ہیں ان کا بیانیہ گھر گھر پہنچ چکا اور عوام کو ایک سال میں ہی سب کچھ سمجھ آ چکا لوگوں نے نئے پاکستان کا نعرہ مارنے والوں کی ناکامیوں کو اچھی طرح دیکھ لیا عوام کو اب نوازشریف کا وہ دور یاد آنے لگا ہے جب معیشت ترقی کر رہی تھی اسٹاک ایکسچینج 54 ہزار کی بلند ترین سطح کو چھو چکی تھی ڈیزل پیٹرول کی قیمت بہت نیچے آ چکی تھیں کسان کو کھاد سستی مل رہی تھی مزدور خوشحال ہوچکا تھا تاجر بھی خوش تھا ہر شعبے سے وابستہ شخص کو ریلیف مل رہا تھا سی پیک پر کام تیزی سے جاری تھا پہ سب اس وقت ہو رہا تھا جب نوازشریف ملک کا وزیراعظم تھا یہ سب اب قوم کو یاد آ رہا ہے اب عوام نے تبدیلی کا بھیانک چہرہ اچھی طرح دیکھ لیا اب وہ لوگ بھی اپنی غلطیوں پر پچھتا رہے ہوں گے جنہوں نے تبدیلی کا نعرہ بڑے جوش سے لگوایا ایک سال ہو گیا ملک کے حالات دن بدن بد سے بدتر ہو رہے ہیں۔

مہنگائی غربت بےروزگاری میں تیزی سے اضافہ ہو رہا ہے معیشت کا برا حال ہے ہر پاکستانی مایوسی کا شکار ہے ان حالات میں نوازشریف کو کوئی ڈیل کی ضرورت نہیں البتہ آج اس ملک کو نواز شریف کی ضرورت ہے نوازشریف بری ہوگا کسی کی ڈیل یا ڈھیل سے نہیں بلکہ غریب عوام کی دعاؤں سے کیونکہ غریب عوام کی دعاؤں کی ہی وجہ سے سزا سںنانے والوں نے خود نوازشریف کی بےگناہی دنیا کو بتائی اب نوازشریف کو کسی ڈیل کی کوئی ضرورت نہیں رہی۔

 

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here