چین نے ایک بار پھر سلامتی کونسل میں مسعود اظہر کیخلاف قرارداد ویٹوکردی

نیو یارک:چین نے ایک بار پھراقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں جیش محمد کے سربراہ مسعوداظہرکےخلاف پابندی کی قرارداد ویٹوکردی ہے۔ بھارت کی درخواست پر قرارداد فرانس،امریکا اور برطانیہ نے پیش کی تھی۔

ترجمان چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے کہ چین نے ہمیشہ ذمہ دارانہ رویے کا مظاہرہ کیا ہے۔

چینی وزارت خارجہ کے ترجمان نے مزید کہا کہ قرارداد پرفریقین سے رابطے میں رہے ہیں اور ہمیشہ مناسب مؤقف اپنایا ہے۔مسئلے پرمتعلقہ اداروں کو قوانین اور طریقہ کار کی پیروی کرنی ہوگی، تمام فریقین کیلئے قابل قبول حل مسئلے کا مناسب حل ہوگا۔

چینی وزارت خارجہ کا کہنا ہے دیرپا نتائج کیلئےسنجیدہ مذاکرات کی ضرورت ہے۔مسعود اظہر جیسے مسائل مسئلہ کشمیر حل نہ ہونے کی وجہ سے پیدا ہوتے ہیں۔چین کا دیرینہ موقف ہے کہ مسئلہ کشمیر کو حل کیا جائے۔

بھارتی وزارت خارجہ کی جانب سے اس فیصلے کے بعد جاری کئے گئے بیان میں مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہاگیا ہے کہ وہ مستقبل میں قرارداد کی منظوری کیلئے کوشش کرتے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اب جیش محمد کے رہنما کے خلاف ایکشن میں رکاوٹ پیدا ہوگئی ہے۔

بھارتی میڈیا کے مطابق یہ چوتھی بار ہے جب چین نے مسعود اظہر پر پابندی کی قرارداد ویٹو کی ہے۔ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں مسعود اظہر پر پابندی کی قرارداد ستائیس فروری کو فرانس، برطانیہ اور امریکا نے پیش کی تھی۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here