تہران میں مسافر طیارہ گر کر تباہ، 176 مسافر جاں بحق

تہران: ایران کے دارلحکومت تہران میں یوکرائن کا بوئنگ مسافر طیارہ آج علی الصبح گر کر تباہ ہو گیاہے جس میں 176 مسافر سوارتھے جن میں سے کوئی بھی زندہ نہیں بچ سکا ہے تاہم اس معاملے پر چلنے والی تمام افواہوں کو مسترد کرتے ہوئے ایران میں یوکرائنی سفارتخانے نے بیان جاری کر دیاہے۔

ایران میں یوکرائنی سفارتخانے نے بیان جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ تہران میں یوکرائن کا مسافر طیارہ میزائل لگنے یا دہشتگردی کی کارروائی کے باعث نہیں بلکہ انجن فیل ہونے کے باعث گر کر تباہ ہواہے ۔طیارے میں 176 افراد سوار تھے اور اس حادثے میں تمام ہلاک ہو گئے ہیں ۔

غیر ملکی میڈیا کا کہناہے کہ یوکرائن کے بوئنگ طیارے نے صبح 6بج کر 12 منٹ پر ایران کے امام خمینی ایئر پورٹ سے یوکرائن کے دارلحکومت کیف کیلئے پرواز بھری لیکن اڑنے کے ٹھیک آٹھ منٹ کے بعد طیارے کا رابطہ منقطع ہو گیا اور تہران میں ہی گر کر تباہ ہو گیا۔

گرنے سے قبل طیارے کی ویڈیو بھی سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی ہے جس میں دیکھا جا سکتاہے کہ طیارے میں آگ بھڑکی ہوئی ہے اور وہ تیزی کے ساتھ نیچے کی جانب آ رہاہے ، کچھ ہی دیر میں طیارہ زمین سے ٹکراتا ہے اور بڑے پیمانے پر دھماکہ ہوتا اور ہر طرف روشنی ہی روشنی ہو جاتی ہے۔

تازہ اطلاعات کے مطابق حادثے کے بعد یوکرین نے ایران جانے والی مسافر پروازیں غیر معینہ مدت کے لیے بند کرنے کا اعلان کر دیا ہے۔

 

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here