ہماری فوجیں ایران میں ہی رہیں گی اور ہمارا جنگی جہاز آبنائے ہرمز جائے گا، آسٹریلیا

سڈنی: ایران نے گزشتہ روز جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کے جواب میں عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر میزائلوں سے حملہ کیا اور دعویٰ کیاہے کہ حملے کے نتیجے میں 80 افراد مارے گئے ہیں اہم امریکہ کی جانب سے نقصانات کی تفصیلات جاری نہیں کی گئی ہیں ۔

ایران اور امریکہ کے درمیان جاری کشیدہ صورتحال کے پیش نظر اب آسٹریلیا بھی میدان میں آ گیاہے ، آسٹریلین وزیراعظم سکاٹ موریسن نے بیان جاری کرتے ہوئے کہاہے کہ آسٹریلیا کا فوجی عملہ عراق میں ٹھہرتے ہوئے اپنا مشن جاری رکھے گا ۔

رپورٹرز سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ آسٹریلیا کا نیول ویزل (جنگی جہاز) پلان کے مطابق آبنائے ہرمز اسی ہفتے جائے گا تاکہ علاقے میں مال برادر جہازوں کی نقل و حرکت  کو محفوظ بنانے میں مدد فراہم کی جا سکے ۔

یاد رہے کہ گزشتہ روز ایران نے جنرل قاسم سلیمانی کے قتل کا بدلہ لیتے ہوئے عراق میں امریکی فوجی اڈوں پر بلیسٹک میزائلوں سے حملہ کیا اور دعویٰ کیا کہ حملہ کامیاب رہا جس میں80 افراد مارے گئے ہیں اور امریکہ کو جانی کے ساتھ جنگی سازو سامان کی تباہی کا بھی بھاری نقصان اٹھانا پڑا ہے ۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here