ولیمسن نے نیوزی لینڈ کی پوزیشن مضبوط بنادی،میچ دلچسپ مرحلے میں داخل

ابوظہبی: پاکستان کیخلاف تیسرے اور آخری ٹیسٹ میچ میں نیوزی لینڈ کے کپتان کین ولیمسن نے سنچری بناکر اپنی ٹیم کی پوزیشن مستحکم کردی۔

شیخ زاید کرکٹ اسٹیڈیم ابوظہبی میں کھیلے جارہے میچ میں کیویز بلے بازوں نے شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے دوسری اننگز میں 4 وکٹوں کے نقصان پر 272 رنز بنالیے جبکہ اسے پاکستان پر 198 رنز کی برتری حاصل ہوچکی ہے۔

چوتھے دن کا کھیل ختم ہوا تو کین ولیمسن 139 اور ہینری نکولس 90 رنز بناکر ناٹ آؤٹ تھے۔

کپتان کین ولیمسن اور نکولس کے درمیان پانچویں وکٹ پر 212 رنز کی شراکت ہوچکی ہے۔

ابوظہبی ٹیسٹ کے چوتھے روز کا کھیل شروع ہوا تو نیوزی لینڈ نے 2 وکٹوں کے نقصان پر 26 رنز سے اننگز کا آغاز کیا، اس موقع پر کپتان کین ولیمسن 14 اور سومرویلے ایک رنز کے ساتھ کریز پر موجود تھے۔

سومرویلے 4، روس ٹیلر 22 رنز بنا کر آؤٹ ہوئے، یاسر شاہ نے نیوزی لینڈ کے خلاف دوسری اننگز میں 2 وکٹیں حاصل کیں تو انہوں نے تیز ترین 200 وکٹیں لینے کا 82 سال پرانا ریکارڈ توڑا۔

انہوں نے 33 میچز میں 200 وکٹیں حاصل کیں جب کہ ان سے قبل آسٹریلوی لیگ اسپنر کلیری گرمٹ نے 1936 میں 36 ٹیسٹ میچز میں 200 وکٹیں حاصل کی تھیں۔

کھیل کے تیسرے روز پاکستان کی پوری ٹیم 348 رنز پر پویلین لوٹ گئی تھی جس کے بعد نیوزی لینڈ نے اننگز کا آغاز کیا تو اوپنر جیت راول بغیر کوئی رن بنائے شاہین شاہ کا شکار بنے جب کہ 24 کے مجموعی اسکور پر ٹام لیتھم 10 رنز بنا کر یاسر شاہ کی گیند پر آؤٹ ہوئے۔

یاد رہے کہ نیوزی لینڈ نے اپنی پہلی اننگز میں 274 رنز بنانے کے بعد پویلین لوٹ گئی تھی۔

یاد رہے کہ پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان تین ٹیسٹ میچز کی سیریز 1-1 سے برابر ہے۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here