نواز شریف کی اینجیو پلاسٹی ممکن نہ ہوئی تو دوبارہ  بائی پاس سرجری کرنا پڑ سکتی ہے،ڈاکٹر عدنان

لاہور: سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹرعدنان نے کہا ہے کہ نواز شریف کی زندگی کو خطرات لاحق ہیں’ عارضہ قلب ان کی زندگی کے لیے بہت بڑا خطرہ ہے۔

ڈاکٹر عدنان کا کہنا ہے کہ نواز شریف کا علاج ہورہا ہے اور چوبیس گھنٹے ان کی
میڈیکل نگرانی کی جارہی ہے،اگرنواز شریف کی اینجیو پلاسٹی ممکن نہ ہوئی تو دوبارہ
بائی پاس سرجری کرنا پڑ سکتی ہے۔

انہوں نے کہا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کے دماغ کو خون سپلائی کرنے والی
شریانیں بند ہیں ،نواز شریف کو جب ہسپتال داخل کرنے ضرورت پڑی انہیں کر دیا جائیگا۔

واضح رہے کہ العزیزیہ ریفرنس میں سزا پانے والے سابق وزیراعظم نوازشریف کو سپریم کورٹ نے طبی بنیادوں پر 6 ہفتوں کے لیے ضمانت پر رہا کیا ہے۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here