توہین صحابہ کرام رضوان اللہ اجمعین کا ارتکاب ،عمران خان کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست

اسلام آباد:توہین صحابہ کرام رضوان اللہ اجمعین کا ارتکاب ، وزیر اعظم عمران خان کے خلاف اندراج مقدمہ کی درخواست دائر کر دی گئی ہے۔

تفصیلات کے مطابق ایڈوکیٹ سپریم کورٹ محمد طارق اسد نے اسلام آباد کے تھانہ آئی نائن میں درخواست دائر کی ہے جس میں موقف اختیار کیا ہے کہ وزیر اعظم عمران خان نے اپنی تقریر میں صحابہ کرام رضی اللہ کے بارے میں کچھ ایسے الفاظ کہے ہیں جو صحابہ کرام رضی اللہ کی واضح توہین ہے ۔

عمران خان نیازی کی جانب سے اصحاب رسول ّ کی توہین میں کہے گئے الفاظ حرف بہ حرف یہ ہیں ” جب جنگ بدر ہوئی تھی تو صرف 313 تھے لڑنے والے باقی ڈرتے تھے لڑنے سے ، جب جنگ احد ہوئی تو سرکار مدینہ نے تیر کمان والوں سے کہا کہ تم اپنی پوزیشن نہیں چھوڑنا جب لوٹ مار شروع ہوئی تو وہ چلے گئے ،انہوں نے سرکار مدینہ کا حکم نہیں مانا”

ایڈوکیٹ محمد طارق اسد نے اپنی درخواست میں کہا ہے کہ عمران خان نیازی نے اپنی تقریر میں معاذ اللہ اصحاب رسول صلی اللہ علیہ وسلم کو بزدل لٹیرے اور حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا نافرمان ثابت کرنے کی کوشش کی ، صحابہ کرام صلی اللہ علیہ وسلم کو بزدل کہنا ،لٹیرا کہنا اور حضور صلی اللہ علیہ وسلم کا نا فرمان کہنا بدترین گستاخی اور توہین ہے۔

درخوسات گزار نے کہا ہے کہ عمران خان نیازی کی جانب سے اصحاب صحابہ کی شان میں گستاخی سے پاکستان کے 22 کروڑ عوام کے مزہبی جذبات مجروع ہوئے ہیں،مزکورہ حالات و واقعات کے روشنی میں ملزم عمران خان نیازی کے خلاف پاکستان پینل کوڈ اور انسداد دہشتگردی ایکٹ کے تحت فوری طور پر مقدمہ درج کر کے ان کی گرفتاری عمل میں لائی جائے۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here