استعفے کے علاوہ دیگر مطالبات پر بات چیت کے لئے تیار ہیں:وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ اپوزیشن سے مذاکرات کرنے والی حکومتی کمیٹی مکمل طور پر بااختیار ہے استعفے کے علاوہ دیگر مطالبات پر بات چیت کے لئے تیار ہیں۔ جمہوری اداروں کے استحکام پر یقین رکھتا ہوں۔ صاف وشفاف جمہوریت ہی عوامی مسائل کے حل میں پیش رفت کو ممکن بنا سکتی ہے اور ہم اپنے اس ایجنڈے پر گامزن ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کو وزیراعظم آفس میں حکومتی مذاکراتی کمیٹی سے ملاقات میں کیا۔

کمیٹی نے وزیر دفاع چیئرمین کمیٹی پرویز خٹک کی سربراہی میں وزیراعظم سے اہم ملاقات کی۔ چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی، سپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر، وفاقی وزراء شفقت محمود، مولانا نور الحق قادری، اسد عمر، سپیکر پنجاب اسمبلی چوہدری پرویز الٰہی موجود تھے۔

سپیکر پنجاب اسمبلی نے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان سے اپنے رابطوں کی تفصیلات سے بھی آگاہ کیا جبکہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی کے سربراہ پرویز خٹک نے اپوزیشن سے اب تک ہونے والے مذاکرات کے بارے میں آگاہ کیا۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم کو اپوزیشن کے بنیادی مطالبات سے آگاہ کر دیا گیا ہے۔ وزیراعظم نے کہا ہے کہ جائزمطالبات پر بات چیت کے لئے تیار ہیں تاہم استعفے پر کوئی بات نہیں ہو سکتی۔ ملک میں سیاسی استحکام سب کی ذمہ داری اور حکومت اس حوالے سے اپنی ذمہ داری کا ادراک رکھتی ہے۔ حکومت امن و امان برقرار رکھنا چاہتی ہے۔

وزیراعظم نے واضح کیا کہ حکومتی مذاکراتی کمیٹی مکمل طور پر بااختیار ہے اور مذاکرات جاری رکھیں گے۔ حکومتی مذاکراتی کمیٹی نے وزیراعظم کو اپنی تجاویز سے آگاہ کر دیا ہے اور اس ملاقات کے تناظر میں رہبر کمیٹی سے گفتگو و شنید کی جائے گی۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا ہے کہ حکومتی کمیٹی مکمل اختیار کے ساتھ رہبر کمیٹی سے مذاکرات کرے ۔

چوہدری پرویز الہی نے وزیراعظم کو مولانا سے ہونے والی ملاقات پر بریفنگ دی۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ حکومتی کمیٹی مکمل اختیار کے ساتھ رہبر کمیٹی سے مذاکرات کرے۔

تبصرے

جواب چھوڑ دیں

Please enter your comment!
Please enter your name here